کراچی میں ڈیجیٹل ادائیگیوں سے روزگارمواقع بڑھنے کا امکان – اردو سائٹ

کراچی میں ڈیجیٹل ادائیگیوں سے روزگارمواقع بڑھنے کا امکان - ایکسپریس اردو
http://mouj.pk/product/heamo-tablet/

کراچی جی ڈی پی میں مزید ڈیڑھ ارب ڈالر فراہم کرسکے گا،ویزاگلوبل اسٹڈی میں انکشاف

 کراچی: کراچی میں ڈیجیٹل ادائیگیوں(کیش لیس)کے فروغ سے 2032تک کراچی میں نہ صرف روزگار کے مواقع میں4.7فیصد تک اضافہ ہوسکتا ہے بلکہ کراچی ملکی جی ڈی پی میں اضافی ڈیڑھ ارب ڈالر بھی فراہم کرسکتا ہے۔

اس بات کا انکشاف گزشتہ روز ویزا اور تھاٹ لیب کی جانب سے کیش لیس اسٹڈیز سے متعلق کراچی سے متعلق جاری کردہ اسٹڈی میں کیا گیا۔ اس موقع پر ویزا پاکستان کے کنٹری منیجر کامل خان، اسکول آف پبلک پالیسی کے سینئر ڈائریکٹر مجید ہجیر اور کراچی چیمبرکے صدر مفسر عطا ملک بھی موجود تھے۔

مجید ہجیر نے بتایا کہ اسٹڈی کے مطابق کراچی کے 90فیصد افراد جو کہ ڈیجیٹل ادائیگیوں کا طریقہ کار عمومی طور پر نہیں اپناتے ان کی جانب سے ڈیجیٹل ادائیگیوں کے استعمال کے فروغ سے کراچی میں صارفین، کاروبار اور حکومت کو سالانہ 1.5 ارب ڈالر یا181.5ارب روپے کا خالص فائدہ ہوسکتا ہے جو کہ ملکی جی ڈی پی میں بھی اضافے کا سبب بنے گا جبکہ ڈیجیٹل ادائیگیوں کے فروغ سے صرف کراچی میں 2032 تک روزگار کے مواقع میں4.7فیصد اضافہ بھی ممکن ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ چپ کارڈ اور تھری ڈی سیکیور کے باعث اب ڈیجیٹل طریقے سے ادائیگیاں کرنا اور بھی زیادہ محفوظ ہوچکا ہے۔ ویزا کنٹری منیجر کا کہنا تھا کہ اس مرتبہ ہم پاکستان میں دگنی سرمایہ کاری کے ساتھ آئے ہیں۔

بشکریہ ایکسپریس نیوز
https://www.express.pk/story/1277957/6